احمد ندیم قاسمی نمبر

شمارہ ۵، اکتوبر تا دسمبر 2006ء


مجھے کہنا ہے کچھ۔۔۔۔

زمیں لوگوں سے خالی ہو رہی ہے
یہ رنگِ آسماں دیکھا نہ جاۓ
قاسمی صاحب اس دورمیں اردو کی عظیم ترین ہستی تھے، اس میں  کسی شک کی گنجائش نہیں۔
جب ابنِ انشاء کا انتقال ہوا تھا تو میرے کرم فرما خلیل الرحمن اعظمی نے لکھا تھا "۵۱ برس کی عمر بھی کوئ عمر ہوتی ہے"۔ اور جب خلیل بھائ خود اسی عمر میں اس دنیا سے رخصت ہوۓ تو شمیم حنفی نے یہی بات ان کے بارے میں لکھی تھی۔ قاسمی صاحب نوے سال جیے لیکن ان کے بارے میں بھی جی چاہتا ہے کہ یہی لکھا جاۓ۔

آخر برگد کا یہ درخت ٹوٹ ہی گیا۔

ان کی یاد میں یہ شمارہ ہماری طرف سے نذرانۂ عقیدت۔۔۔
یوں تو انٹر نیٹ پر صفحات کی کوئ قید تو نہیں ہوتی اور ہم دوسری تخلیقات بھی اس میں شامل کر سکتے تھے، لیکن یہ گوارا نہیں ہوا کہ قاسمی صاحب جیسی قد آور شخصیت کے لیے محض ایک گوشہ رکھا جاۓ۔ اس لیے یہ شمارہ محض قاسمی صاحب کے لیے مخصوص ہے۔

قومی کونسل براۓ فروغِ اردو زنبان، نئ دہلی کے ماہنامے اردو دنیا کا ستمبر 2006ء کے شمارے میں گوشۂ احمد ندیم قاسمی  بھی شامل تھا۔ ہماری درخواست  پر معاون مدیر ڈاکٹر فیروز عالم نے مشمولات کی سافٹ کاپی ہم کو مہیا کی، ہم اس کے لۓ ان کے ممنون ہیں۔ اگر چہ اس کے مشمولات میں بھی مانگے کا اجالا شامل تھا لیکن بطور خاص گلزار کی نظم اور فاروقی صاحب کے مضمون کی اہمیت ہمارے نزدیک زیادہ ہے۔ ہمیں امید ہے کہ یہ شماری بھی آپ کو پسند آۓ گا۔

آئندہ شماروں میں عام اشاعت کے ساتھ خصوصی گوشے جاری رہیں گے۔ آئندہ شماروں کے منتخب موضوعات ہیں::

اردو کا ارتقاء

ادبِ اطفال

طنز و مزاح

ان خصوصی گوشوں کے لیے آپ کی تخلیقات کا انتظار رہے گا۔ جس موضوع پر زیادہ تخلیقات جمع ہو جائیں گی، وہ گوشہ پہلے شایع کیا جاۓ گا۔

اعجاز عبید۔
تصویر

مشمولات

سمت

آپ بغیر کسی سافٹ ویر کے اردو لکھ سکتے ہیں، ای میل کر سکتے ہیں۔ گوگل میں اردو میں ٹائپ کریں اور اردو میں درست نتائج دیکھیں

اردو تحریر پرامداد 
اردو لائبریری
اردو کتابوں کی ای پبلشنگ
اردو کمپیوٹنگ کے مختلف پروجیکٹس
اردو کمپیوٹنگ کا سنگِ میل یاہو گروپ